معاشرت - طلاق و خلع

Pakistan

سوال # 146864

میں پاکستان سے ہوں، میں نے غصے میں کہا کہ اپنا بیگ تیار کرو اور اپنے والدین کے گھر جاؤ، لیکن میں نے اس سے طلاق مراد نہیں لی تھی، اس جملہ کے بارے میں کیا حکم ہے؟کیا اس سے طلاق ہوجاتی ہے یا نہیں؟

Published on: Dec 19, 2016

جواب # 146864

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 288-226/H=3/1438



 



اگر آپ نے صرف یہی کہا تھا کہ ”اپنا بیگ تیار کرو اور اپنے والدین کے گھر جاوٴ“ اور اس سے طلاق مراد نہیں لی تھی نیز بہ سلسلہٴ طلاق کوئی لفظ نہیں بولا تھا تو محض اِس قول (اپنا بیگ الخ) سے کوئی طلاق واقع نہیں ہوئی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات