عبادات - جمعہ و عیدین

United Kingdom

سوال # 19395



جو
شخص جمعہ کے دن ناخون کاٹتا ہے تو اللہ تعالی اس کو اگلے جمعہ تک آفت سماوی اور
تباہی سے محفوظ رکھتے ہیں بلکہ مزید تین دن اور، یعنی دس دن تک۔ دانتوں سے ناخون
کاٹنے کو برص کا سبب بتایاجاتا ہے۔ برائے کرم آ پ صحیح حدیث سے حوالہ عنایت
فرماویں۔



Published on: Feb 11, 2010

جواب # 19395

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی(م):
192=192-2/1431



 



 ضعیف روایت سے یہ فضیلت ثابت ہے، حوالے کی عبارت
یوں ہے:
وفي
الحدیث: من قلم أظافیرہ یوم الجمعة أعاذہ اللہ من البلایا إلی الجمعة الأخری
وزیادة ثلاثة أیام وفي الشامیة: قولہ (وفي الحدیث إلخ) قال الرزقاني: أخرج البیہقي
من مسند أبي جعفر الباقر قال: کان رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم یأخذ من أظفارہ
وشاربہ یوم الجمعة، لہ شاہد موصول عن أبي ہریرة لکن سندہ ضعیف قال: [کان رسول اللہ
صلی اللہ علیہ وسلم یقصُّ شاربہ ویُقلّم أظفارہ یوم الجمعة قبل أن یروح إلی
الصلاة] أخرجہ البیہقي وقال عقبة: قال أحمد: في ہذا الإسناد من یجہل

قال السیوطي: وبالجملة فأرجحہا: أي الأقال دلیلاً ونقلاً یوم الجمعة والأخبار
الواردة فیہ لیست بواہیة جدًّا مع أن الضعیف یعمل بہ في فضائل الأعمال اھ (شامي)



(۲) اس بارے میں کوئی حدیث
نظر سے نہیں گذری، البتہ فقہاء کی عبارات میں اس کی تصریح موجود ہے،
قولہ: [ویستحب قلم
أظافیرہ وقلمہا بالأسنان مکروہ یُورث البرص]۔ (شامي زکریا:
۹/۵۸۰)




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات