معاشرت - طلاق و خلع

India

سوال # 156248

زید کی بیوی زید سے جھگڑا کر کے اپنی ماں کے گھر چلی گئی، زید کا ایک بیٹا ایک سال تین مہینہ کا ہے، اس لڑکے کو بھی وہ اپنے ساتھ لے کر گئی، تو کیا زید اپنے بیٹے سے مل نہیں سکتا؟ اگر زید کے سسرال والے اس کے بیٹے کو زید سے ملنے نہ دیں تو زید کو کیا کرنا چاہئے؟

Published on: Nov 22, 2017

جواب # 156248

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 306-267/H=2/1439



اگر اداءِ حقوق میں زید کی طرف سے کوتاہی ہوئی یا ہو رہی ہے تو اُس پر واجب ہے کہ معافی تلافی کرکے بیوی کو لاکر اپنے پاس حسن معاشرت سے رکھے اگر کوتاہی بیوی کی طرف سے ہے تو اُس پر واجب ہے کہ معافی تلافی کرلے اور دونوں کی طرف سے کوتاہی ہو تو دونوں پر واجب ہے کہ اپنی اپنی اصلاح کرکے آئندہ حسن معاشرت کے ساتھ گذر بسر کا نظام بنالیں اگر اصلاحی کوششوں کے باوجود سسرال والے نہ مانیں تو دو چار بااثر معاملہ فہم لوگوں کو بیچ میں ڈال کر مفاہمت و مصالحت کی صورت اختیار کریں نیز سسرال والوں کو چاہئے کہ بغیر کسی وجہ شرعی کے بیوی اور بیٹے سے ملاقات کی غرض سے آنے پر زید کے حق میں رکاوٹ نہ بنیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات