India

سوال # 146816

مفتیان عظام, اگر کسی نے اپنے یا کسی اور کے عقیقہ کے لئے کوئی بکری خریدی یا اپنے گھر کی ہی پالتو بکری میں عقیقہ کی نیت کر لی تو کیا اس بکری کا دودھ استعمال میں لانا اور جس کے عقیقہ کا وہ جانور ہے اس کا اس بکری کا دودھ پینا جائز ہے ؟اگر نہیں تو پھر اس دودھ کا کیا کیا جائے ۔

Published on: Dec 19, 2016

جواب # 146816

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 306-299/M=3/1438



 



عقیقہ واجب نہیں، مسنون یا مستحب ہے لہٰذا عقیقہ کے لیے بکری خریدی یا گھر کی پالتو بکری میں عقیقہ کی نیت کرلی تو اس سے جانور عقیقہ کے لیے لازم ومتعین نہیں ہوگیا پس اس بکری کا دودھ استعمال کرنا اور جس کا عقیقہ ہے اس کا اس بکری کا دودھ پینا ناجائز نہیں تاہم اولی یہ ہے کہ دودھ استعمال نہ کرے بلکہ کسی غریب کو صدقہ کردے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات