عقائد و ایمانیات - اسلامی عقائد

Pakistan

سوال # 173958

وسیلہ سے کیا مراد ہے اور اس کی کتنی اقسام ہیں اور اس پر کونسی تفصیلی کتابیں ہیں۔

Published on: Nov 3, 2019

جواب # 173958

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:150-96/sn=3/1441



(الف)وسیلے کا مطلب کسی کا واسطہ دے کراللہ تعالی کی بارگاہ میں دعا کرنا، مثلا یہ کہنا کہ اے الٰہی بحرمت فلاں میری دعا قبول فرما۔ (دیکھیں: تالیفات رشیدیہ، ص: 69،ط: کراچی)



(2) متوسل بہ (یعنی جس کے وسیلے سے دعا مانگی جائے) کبھی عمل صالح ہوتا ہے، کبھی کوئی زندہ یا مردہ خدا کا برگزیدہ بندہ ہوتا ہے۔ ان تینوں طرح کے وسیلے شرعا جائز ہیں۔ المہند علی المفند، تالیفات رشیدیہ اور روح المعانی میں اس مسئلے سے متعلق مختصر مگر اچھی تفصیل ہے، نیز اس موضوع پر ”توسل واستغاثہ بغیر اللہ اور غیر مقلد ین کا مذہب“ نام سے ایک مستقل رسالہ بھی مطبوعہ ہے، اس کا مطالعہ بھی مفید ہوگا۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات