عبادات - صوم (روزہ )

INDIA

سوال # 155014

عورت کو اگر رمضان میں حیض آئے تو روزہ ٹوٹ جاتا ہے اگر مرد کو احتلام ہوا تو روزہ آخر کیوں نہیں ٹوٹ جاتا ہے ؟

Published on: Oct 14, 2017

جواب # 155014

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 18-10/N=1/1439



عورت کو حیض آنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے اور مرد کو احتلام ہونے سے روزہ نہیں ٹوٹتا، اس کی وجہ یہ ہے کہ حیض روزے کے منافی ہے اور احتلام روزے کے منافی نہیں اگرچہ غسل دونوں سے ٹوٹ جاتا ہے۔



ولو احتلم في نھار رمضان فأنزل لم یفطرہ لقول النبي صلی اللہ علیہ وسلم: ثلاث لا یفطرن الصائم: القییٴ والحجامة والاحتلام، ولأنہ لا صنع لہ فیہ فیکون کالناسي (بدائع الصنائع، ۲: ۶۰۲، ط: دار الکتب العلمیة بیروت)، ولو حاضت المرأة أو نفست بعد طلوع الفجر فسد صومھما ؛ لأن الحیض والنفاس منافیان للصوم لمنافاتھما أھلیة الصوم شرعاً بخلاف القیاس بإجماع الصحابة رضي اللہ عنھم (المصدر السابق، ص ۶۰۹)۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات