India

سوال # 15398



میں شیئر مارکیٹ کا کاروبار کرتا ہوں۔ میں
یہ معلوم کرنا چاہتاہوں کہ شیئر مارکیٹ کے
F & O(فیوچر اور
آپشن) سیکشن میں تجارت کرنا جائز ہے یا نہیں؟
F &
O
یعنی
کہ اس کے اندر ہم کو جو کمپنی کے شیئر لینے ہیں اسی کے لاٹ (مجموعی شیرز) لیتے
ہیں، وہ لاٹ دو ہزار شیئر سو شیئر کے ہوتے ہیں۔ وہ لاٹ کے شیئر کی قیمت مثلاًدو
لاکھ ہوتی ہے تو اس کے اندر ہم کو صرف اس دو لاکھ کے دس یا پندرہ فیصد رقم بھرکر
وہ لاٹ ہمارا ہو جاتا ہے۔ اور یہ لاٹ ہمارے ڈیمیٹ اکاؤنٹ میں نہیں جمع ہوتی۔ تو
برائے کرم مجھے یہ بتا دیجئے کہ اس
F & O(فیوچر اور
آپشن) کے اندر تجارت کرنا حلال ہے یا حرام ہے؟ اس کا جواب مجھے جلد دے دیں۔



Published on: Aug 27, 2009

جواب # 15398

بسم الله الرحمن الرحيم



فتوی: 1443=1372/ب



 



آپ کی انگریزی میں تحریر کردہ اصطلاح سمجھ
میں نہیں آئی، تاہم آپ کو شیئر مارکٹنگ کے بارے میں اصولی بات لکھتے ہیں وہ یہ کہ
آج کل شیئر کی مروجہ ہوائی خرید وفروخت بالکل جائز نہیں۔ پیسہ دے کر زیادہ یا کم
پیسہ لینا قطعی ناجائز ہے اور سود ہے جیسے آج شیئر خریدا او رایک دو روز کے بعد
شیئر کا بھاوٴ بڑھ جانے پر فروخت کردیا تو یہ قطعی ناجائز وحرام ہے اور سود ہے۔
البتہ کمپنی سے شیئر خریدااور کمپنی نے جائز کاروبار میں لگایا، سال بھر محنت کرنے
کے بعد جس قدر منافع ہوا اسے شیئر کے تناسب سے تقسیم کرلیا جائے تو یہ صحیح اور
درست ہے۔




واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات