• معاملات >> شیئرز وسرمایہ کاری

    سوال نمبر: 602078

    عنوان: کسی دوسرے کانم بر بھیج کر آیا ہوا او، ٹی، پی بھیجنا 

    سوال:

    میرا سوال یہ ہے کہ آج کل ایمازون (Amazon)کی جانب سے ایک اسکیم چل رہی ہے کہ اگر ہم ان کو کوئی او ٹی پی (otp)سینڈ کریں تو پر او ٹی پی وہ لوگ 40 50 روپے دیتے ہیں اس کی وجہ سے آج کل نو جوان کسی کا بھی نمبر لیتے ہیں اور اس کا نمبر ڈال کر اس سے او ٹی پی لے کر Amazon والوں کو سینڈ کر دیتے ہیں اب جس کا نمبر لیا گیا ہے ان میں سے کسی کو تو معلوم ہوتا ہے کہ کیا ہوا ہے اور کسی کو پتہ بھی نہیں لگتا تو یہ پیسا لینے اور اس کا استعمال کرنے کا کیا حکم ہے اور لوگوں سے جو نمبر لے کر ان کا پیسہ لے رہے ہیں اس کا کیا حکم ہے ؟

    مہربانی فرما کر سہولت کے ساتھ جتنا جلدی ہو سکے جواب مرحمت فرما دیں نوازش و کرم ہوگا۔

    جواب نمبر: 602078

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:379-316/N=6/1442

     او، ٹی، پی (Otp) یعنی: ون ٹائم پاس ورڈ، ایک بار کے لیے عارضی پاس ورڈ، یہ بھی مستقل پاس ورڈ کی طرح انتہائی اہم ہوتا ہے، اس کے ذریعے لوگوں کی خاص چیزوں میں مالی یا غیر مالی تصرف ممکن ہوتا ہے ؛ اس لیے کسی اسکیم کے تحت اپنی مالی منفعت کے لیے ایمیزون والوں کو کسی دوسرے کانمبر بھیج کر آیا ہوا او، ٹی، پی بھیجنا درست نہیں، اس میں دوسروں کے حق میں مختلف خطرات کا اندیشہ ہوتا ہے؛ بلکہ اپنا نمبر بھیج کر آیا ہوا او، ٹی، پی بھی کسی دوسرے کو نہیں دینا چاہیے ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند