عبادات - قسم و نذر

INDIA

سوال # 157858

حضرت مفتی صاحب! میں انڈیا سے ہوں، میرا سوال یہ ہے کہ اگر کوئی مرد یا عورت قسم کھائے کہ ”اگر میں یہ کام کروں یا یہ کام نہ کروں تو میں کافر ہوجاوٴں“ ، اگر اس نے یہ قسم توڑ دیا تو کیا وہ مرد یا عورت کافر ہو جائیں گے؟
براہ کرم، قرآن و حدیث کے حوالے سے بتائیں۔

Published on: Jan 22, 2018

جواب # 157858

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:399-360/M=4/1439



مذکورہ طریقے پر قسم کھانے سے قسم منعقد ہوجاتی ہے اور قسم ٹوٹنے پر کفارہ دینا پڑتا ہے، البتہ قسم کھانے والا کافر نہیں ہوگا خواہ مرد ہو یا عورت، لیکن ایسی قسم کھانے سے بچنا چاہیے۔ (مستفاد بہشتی زیور حصہ سوم: ص۵۱قسم کھانے کا بیان)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات