India

سوال # 164351

کیا عورتیں اپنی اصلاح کی نیت سے نامحرم علماء کرام کے بیانات ٹی وی یا موبائل پر دیکھ سکتی ہیں؟

Published on: Sep 23, 2018

جواب # 164351

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1451-1381/H=1/1440



مستند و معتبر علماء کرام کے بیانات تو براہِ راست یا موبائل وغیرہ میں بھری ہوئی آواز کو سن لینا تو جائز ہے مگر نامحرم علماءِ کرام کی چلتی پھرتی یا ساکن تصاویر کا دیکھنا تو جائز نہیں بلکہ گناہ ہے کیونکہ اس میں شہوت کا اندیشہ ہے۔ اس گناہ کی اصلاح نامحرم علماءِ کرام کی تصاویر دیکھ کر ہرگز نہ ہوگی بلکہ اور بہت سے مفاسد و خرابی بسیار میں اضافہ کا قوی اندیشہ ہے ٹی وی او رموبائل میں تصاویر کے ساتھ بیانات عامةً آنکھ کان اور دلوں کے تعیش کا ذریعہ ہو گئے ہیں ایسی صورت میں اصلاح کی توقع بہت مشکل ہے پس بالخصوص عورتوں کو تو اس بلاءِ عظیم سے کوسوں دور رہنا چاہئے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات