• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 60537

    عنوان: بیٹیوں کی شادی کے اخراجات پورے کرنے کی نیت سے خریدی گئی پراپرٹی پر سالانہ زکوٰۃ پراپرٹی کی مارکیٹ ویلیو پر ہو گی یا اس سے حاصل کردہ کراۓ پر ہو گی

    سوال: میں نے اپنی دو بیٹیوں کی شادی کے لئے دو چھوٹے گھر خرید کر اُن کو کرائے پر چڑھا یا ہوا ہے ۔ نیت یہ ہے کہ جب ان کی شادی ہو گی تو ان کو بیچ کر ان کی شادی کے اخراجات پورے کر لوں گا۔ ابھی تک میں ہر سال ان کی مارکیٹ کی قیمت کے حساب سے زکوٰة دے رہا ہوں۔ رہنمائی فرمائیں کہ کیا اس پراپرٹی پر سالانہ زکوٰة اس کی مارکیٹ کی قیمت کے حساب سے ہو گی یا اس سے جو کرایہ وصول ہو گا اس پر ہو گی۔ جزاک اللہ خیراً و احسن الجزا

    جواب نمبر: 60537

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1039-826/D=10/1436-U جب مکان آپ نے فروخت کرنے کے ارادہ سے خریدا ہے تو ہرسال اس کی موجودہ مالیت پر زکاة واجب ہوگی، کرایہ میں حاصل ہونے والی رقم اگر نقد کی شکل میں جمع ہے تو نصاب کا سال پورا ہونے پر جمع شدہ رقم پر زکاة واجب ہوگی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند