• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 59595

    عنوان: اپنے شوہر كا تعاون زكات سے كرنا كیسا ہے؟

    سوال: میرے شوہر کے اوپر پندرہ یا بیس لاکھ کا قرض ہے اور میرے پاس زیور کی رقم اور مال ملا کر تقریبا ً چار لاکھ کی ملکیت ہے۔ اس لیے میرے کچھ سوالات ہیں ۔ براہ کرم، جواب دیں۔ (۱) اس مال کی جو میں زکاة دیتی ہوں تو کیا میں ان کو جن سے قرض لیا ہے دے سکتی ہوں؟ (جب کہ وہ زکاة کے مستحق نہیں ہیں) تاکہ میرے شوہر کا قرض کم ہوجائے؟ (۲) اور کیا شوہر کا قرض اتارنے کی ذمہ داری میری ہے اس مال میں سے جب کہ یہ میرا ذاتی مال ہے ، میں نے سلائی کرکے جمع کیا ہے؟

    جواب نمبر: 59595

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 542-507/Sn=8/1436-U (۱) نہیں، اس سے آپ کی زکاة ادا نہ ہوگی۔ (۲) شرعاً تو یہ ذمے داری آپ کی نہیں ہے؛ بلکہ جس نے قرض لیا اس کی ہے؛ لیکن اخلاقاً آپ کا بھی فرض بنتا ہے کہ قرض کی ادائیگی میں شوہر کی مدد کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند