• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 54356

    عنوان: صدقۃ الفطر

    سوال: زید جس کا تعلق ہندوستان سے ہے لیکن وہ سعودی عربیہ میں نوکری کرتا ہے اور رمضان کا مہینہ آگیا اب اس کو صدقة الفطر دینا ہے تو کس حساب سے صدقةالفطر ادا کرے۔ وہ سعودی میں ہونے کہ وجہ سے وہاں کے حساب سے ادا کرے یا اپنے ملک کے حساب سے ؟؟ آیا اسکا صدقة الفطر سعودی کے اندر ہی ادا کرنا واجب ہے یا وہ اپنے ملک میں اپنے ملک کے حساب سے صدقة الفطر ادا کرسکتا ہے؟

    جواب نمبر: 54356

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1118-881/D=9/1435-U (۱) ایسا شخص سعودی عرب میں گیہوں کی قیمت کے لحاظ سے اپنا صدقة فطر ادا کرے۔ قال في الدر المنتقی فتجب علی مسافر․․․ ویعتبر مکانہ الخ وعلیہ الفتوی (۱/۲۲۶) (۲) سعودی کی قیمت کے لحاظ سے ادا کرے یہ رقم سعودی میں بھی دے سکتا ہے اور اگر اس کے وطن کے لوگ زیادہ ضرورت مند ہوں تو یہاں بھی بھیج سکتا ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند