• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 46917

    عنوان: صورت مسئولہ میں تیس فیصد کی زکاة فی الفور تو واجب نہیں ہے

    سوال: میرا سوال یہ ہے کہ ہم لوگ سرکاری محکمہ کا کام کرتے ہیں ،سامان کو سپلائی کرنے کے بعد سترفیصد کی ادائیگی مل جاتی ہے باقی کی ادائیگی سامان کے لگانے اور صحیح طریقے سے چلنے کے بعد ملتی ہے اگر سامان میں یا میرے کام میں کوئی کمی پائی گئی تو ادائیگی کم یا نہیں بھی ہوسکتی ہے ، ادائیگی میں کبھی چھ مہینے کبھی ایک سال بھی لگ جاتاہے ۔ مجھے ابھی تیس فیصد ادائیگی جو میرے پاس نہیں آئی ہے اس پر بھی ابھی زکاة نکالنی ہوگی یا ادائیگی ہونے کے بعد نکالنی ہوگی؟

    جواب نمبر: 46917

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1210-1309/M=10/1434 صورت مسئولہ میں تیس فیصد کی زکاة فی الفور تو واجب نہیں ہے لیکن اگر ابھی نکال دیں تو وصولیابی کے بعد دوبارہ نکالنا نہیں پڑے گا۔ اور اگر تیس فیصد نہیں ملا تو اس کی زکاة ساقط ہوجائے گی۔ فتجب زکاتہا إذا تم نصابًا وحال الحول لکن لا فوراً بل عند قبض أربعین درہما من الدین القوي کقرض وبدل مال التجارة․․․ (درمختار مع الشامي: ۳/۳۳۶ زکریا)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند