• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 25359

    عنوان: اگر کسی کی مالیت سونا اور نقد ہو ، لیکن زکاة کی قبل ادائیگی رقم اگر کم مقدار میں ہو تو وہ زکاة کیسے ادا کر ے گا؟ مثال کے طور پر دو لاکھ کا سونا ہواور دوہزار نقد رقم ہو جس پر زکاة پانچ ہزار سے زائد ہوتاہے تو اس شکل میں وہ شخص زکاة کی ادائیگی کیسے کرے گا جب کہ اس کے پاس نقد رقم قبل ادائیگی مال سے کم ہے تو کیا اسے سونا بھی بیچنا پڑے گا؟

    سوال: اگر کسی کی مالیت سونا اور نقد ہو ، لیکن زکاة کی قبل ادائیگی رقم اگر کم مقدار میں ہو تو وہ زکاة کیسے ادا کر ے گا؟ مثال کے طور پر دو لاکھ کا سونا ہواور دوہزار نقد رقم ہو جس پر زکاة پانچ ہزار سے زائد ہوتاہے تو اس شکل میں وہ شخص زکاة کی ادائیگی کیسے کرے گا جب کہ اس کے پاس نقد رقم قبل ادائیگی مال سے کم ہے تو کیا اسے سونا بھی بیچنا پڑے گا؟

    جواب نمبر: 25359

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل): 1574=1002-10/1431

    اگر اس کے پاس زکاة کی ادائیگی کے لیے رقم کم ہو تو اس کو چاہیے کہ سونا بیچ کر یا کسی سے قرض لے کر زکاة ادا کرے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند