• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 16692

    عنوان:

    ہمارے پڑوسی سید ہیں بہت زیادہ بیمار ہیں اور بہت زیادہ غریب ہیں۔ ہم زکو ة کے پیسے ان کو دینا چاہتے ہیں او ران پیسوں سے ان کا علاج کرنا چاہتے ہیں۔ مہربانی کرکے جلدی کوئی شکل جائز کی ہو تو بتلائیں؟

    سوال:

    ہمارے پڑوسی سید ہیں بہت زیادہ بیمار ہیں اور بہت زیادہ غریب ہیں۔ ہم زکو ة کے پیسے ان کو دینا چاہتے ہیں او ران پیسوں سے ان کا علاج کرنا چاہتے ہیں۔ مہربانی کرکے جلدی کوئی شکل جائز کی ہو تو بتلائیں؟

    جواب نمبر: 16692

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل):1612=1284-10/1430

     

    سادات کو زکات دینا جائز نہیں، اغنیاء کو ان کی خدمت تبرعات سے کرنا چاہیے، زکات تو میل کچیل ہے، سادات کی شان اس سے ارفع ہے کہ ان کو میل کچیل کھلایا جائے: ولا تدفع إلی بني ہاشم لقولہ علیہ السلام: یا بني ہاشم ! إن اللہ قد حرم علیکم غالة الناس وأوساخہم (ہدایة)

     


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند