• عبادات >> زکاة و صدقات

    سوال نمبر: 148018

    عنوان: دارالحرب میں زكاۃ كی ادائیگی؟

    سوال: اگر کوئی مسلمان دارلحرب میں ہو اور وہ صاحب نصاب ہو تو کیا اس کو ہر سال زکاة ادا کرنی ہوگی؟

    جواب نمبر: 148018

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 413-329/H=4/1438

    ہرسال جو زکاة واجب ہوتی ہے اس کی ادائیگی میں دارالحرب میں ہونا مانع نہیں ہے، یعنی جس مسلمان پر زکاة کی ادائیگی واجب ہوگئی تو وہ خواہ دارالحرب میں ہو تب بھی اس پر کاة کا ادا کرنا واجب ہوتا ہے، کتب فقہ وفتاوی میں مانع ہونے یا ادائیگی کے واجب نہ ہونے کی کہیں کچھ صراحت نہیں ملی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند