• معاشرت >> عورتوں کے مسائل

    سوال نمبر: 30311

    عنوان: میں حنفی مسلک پر عمل کرتاہوں۔ میں ایک مشترکہ فیملی میں رہتاہوں۔ براہ کرم، مشورہ دیں کہ کیا میری بیوی کو میرے بھائیوں کے سامنے برقعہ سے اپنا جسم ڈھانپنا چاہئے؟ یا وہ گھر کے نارمل کپڑے استعمال کرسکتی ہے؟وہ کیا کھانے کے وقت میرے بھائیوں کے سامنے بیٹھ سکتی ہے؟کیا وہ گھرکے روزمرہ امور جیسے کھانا پکانا ، فرش صاف کرنا وغیرہ کو انجا دے سکتی ہے؟ 

    سوال: میں حنفی مسلک پر عمل کرتاہوں۔ میں ایک مشترکہ فیملی میں رہتاہوں۔ براہ کرم، مشورہ دیں کہ کیا میری بیوی کو میرے بھائیوں کے سامنے برقعہ سے اپنا جسم ڈھانپنا چاہئے؟ یا وہ گھر کے نارمل کپڑے استعمال کرسکتی ہے؟وہ کیا کھانے کے وقت میرے بھائیوں کے سامنے بیٹھ سکتی ہے؟کیا وہ گھرکے روزمرہ امور جیسے کھانا پکانا ، فرش صاف کرنا وغیرہ کو انجا دے سکتی ہے؟ 

    جواب نمبر: 30311

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(د):464=287-3/1432

    آپ کے بھائی آپ کی بیوہ کے لیے نامحرم اور اجنبی ہیں، اجنبی مردوں سے پردہ ضروری ہے، لیکن جب کہ آپ مشترکہ فیملی میں رہتے ہیں تو آپ کی بیوی آپ کے بھائیوں کے سامنے گھر کے نارمل کپڑے میں آسکتی ہے، لیکن وہ اوڑھنی وغیرہ سے سر اور حتی الامکان چہرے کو چھپاکر سامنے آئے۔ کھانے کے دوران وہ آپ کے بھائیوں کے سامنے نہ بیٹھے۔ گھر کے روز مرہ کے امور وہ انجام دے سکتی ہے۔ بے محابا ان کے سامنے نہ آئے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند