• عبادات >> اوقاف ، مساجد و مدارس

    سوال نمبر: 46808

    عنوان: SELLING THINGS OF MOSQUE

    سوال: میرا دوست سرفرازاحمد مسجد کا چیئرمین ہے، انہوں نے مسجد کا پرانا سامان بیچ دیا ہے اور رقم تقریبا ً2050 روپئے ہے، سوال یہ ہے کہ کیا وہ مسجد کا سامان بیچ سکتاہے یا نہیں؟ واضح رہے کہ رقم مسجد کی تعمیر خرچ کی گئی ہے ۔ براہ کرم، رہنمائی فرمائیں۔

    جواب نمبر: 46808

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1157-1158/M=10/1434 مسجد کا پرانا سامان اگر کارآمد نہیں رہاتھا، بلکہ ناقابل انتفاع ہوگیا تھا تو اسے بیچ کر قیمت اُسی مسجد کی تعمیر وغیرہ میں لگادینا جائز ہوا، حصیرالمسجد إذا صار خلقًا واستغنی أصل المسجد عنہ․․․ أرجو أن لا بأس بأن یدفع أہل المسجد إلی فقیر أو ینفعوا بہ في شراء حصیر آخر للمسجد (ہندیہ)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند