• عبادات >> اوقاف ، مساجد و مدارس

    سوال نمبر: 44061

    عنوان: موقوفہ عیدگاہ میں میرج ہال بنانا

    سوال: میں لکھنوٴ سے آزاد احمد ہوں، میرا سوال یہ ہے کہ لکھنوٴ میں عیش باغ علاقہ میں ایک عید گاہ ہے اورعید گاہ کی انتظامیہ نے ایک شادی ہال بنام طیب میرج ہال، عید گاہ کے لان ایریا میں تعمیر کی ہے اور یہ عیدگاہ کی باؤنڈری میں ہے، شادی اور دوسری تقاریب کے لیے یہ ہال بک ہوتاہے اور اس کا کرایہ لیا جاتاہے۔ سوال یہ ہے کہ وہاں شادی کا انتظام کرنا اور شادی میں شرکت کرنا شریعت کی روشنی میں درست ہے؟

    جواب نمبر: 44061

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 377-377/M=3/1434 عیدگاہ کے لان ایریا سے معلوم نہیں کیا مراد ہے؟ اگر مراد یہ ہے کہ عیدگاہ موقوفہ ہے اور عیدگاہ کے حدود میں میرج ہال بنایا گیا ہے تو یہ ناجائز ہے، اس میں شادی کا نظم کرنے اور شرکت سے احتراز لازم ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند