• عبادات >> اوقاف ، مساجد و مدارس

    سوال نمبر: 40428

    عنوان: مسجد کے لئے چندہ مگنے والے کو چندہ دینا کیا حرام ہے

    سوال: میرا نام ظفراللہ ہے، میں پاکستان کا رہنے والا ہو ں، مجھے یہ پوچھنا ہے کہ اگر کوئی بندہ مسجد کے لئے چندہ مانگے مسجد میں تو کیا اسکو چندہ دینا حرام ہے؟ ہمارے ملک میں تبلیغی حضرت یہ فتویٰ دیتے ہیں کہ انکو چندہ دینا حرام ہے کیا یہ صحیح ہیکہ کوئی مسجد کے لئے مانگے اورخود نہ دے اور دوسرو ں کوبھی روکے ؟ براہ کرم، اس پر روشنی ڈالیں ۔

    جواب نمبر: 40428

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1283-909/D=D=8/1433 حرام کہنا تو غلط ہے، نماز میں خلل نہ ہو ایسے وقت میں اعلان کردیا جائے، پھر مسجد کے باہری حصے میں آکر لوگوں سے جمع کرلیا جائے۔ اور اگر اسی مسجد کا چندہ ہے تو مسجد میں بھی ایسے وقت جمع کرسکتے ہیں جب خطبہ جمعہ نہ ہورہا ہو اور لوگوں کی نماز میں خلل واقع نہ ہو، یہ چونکہ بضرورت مسجد ہے اس لیے جائز ہے۔ (فتاوی دارالعلوم: ۱۴/ ۲۲۸)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند