• عقائد و ایمانیات >> قرآن کریم

    سوال نمبر: 67527

    عنوان: ختم قرآن پر صدق اللہ العظیم کہنا؟

    سوال: ایک شخص کہتا ہے کہ تلاوت کلام پاک ختم ہونے پر صدق اللہ العظیم کہنا بدعت ہے اور دلیل یہ پیش کرتے ہے کہ یہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین سے ثابت نہیں۔ آپ صاحبان سے گذارش ہے کہ صحیح بات کیا ہے؟

    جواب نمبر: 67527

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1483-1512/L37=2/1438

    تلاوت قرآن کریم کے ختم پر فرضیت یا سنیت کا اعتقاد کیے بغیر ”صدق اللہ العظیم“ کہنے کی گنجائش ہے، بلکہ اہل علم کی ایک جماعت نے اسے آداب تلاوت میں شمار کیا ہے، اور بعض اہلِ علم کا قرآنی آیات ذکر کرنے کے بعد اس کو لکھنے کا معمول بھی رہا ہے، اِس لیے اس کو مطلقاً بدعت کہنا درست نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند