• عقائد و ایمانیات >> قرآن کریم

    سوال نمبر: 608997

    عنوان: آیت کی تفسیر ۲:۲۲۸ 

    سوال:

    سوال : وَالْمُطَلَّقَٰتُ یَتَرَبَّصْنَ بِأنفُسِہِنَّ ثَلَٰثَةَ قُرُوءٍ۔ وَلَا یَحِلُّ لَہُنَّ أن یَکْتُمْنَ مَا خَلَقَ اللَّہُ فِی أرْحَامِہِنَّ إِن کُنَّ یُؤْمِنَّ بِاللَّہِ وَالْیَوْمِ الْاخِرِ۔ وَبُعُولَتُہُنَّ أَحَقُّ بِرَدِّہِنَّ فِی ذَالِکَ إِنْ أَرَادُوا إِصْلَاحًا ۔ وَلَہُنَّ مِثْلُ الَّذِی عَلَیْہِنَّ بِالْمَعْرُوفِ۔ وَلِلرِّجَالِ عَلَیْہِنَّ دَرَجَةٌ۔ وَاللَّہُ عَزِیزٌ حَکِیمٌ ( آیت ۲:۲۲۸ ) ۔

    السلام وعلیکم، حضرت میں اِس آیت کی تفسیر جا ننا چاہتا ہوں، خصوصی اِس آیت کے آخری حصے کی تفسیر -

    جواب نمبر: 608997

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 504-269/B-Mulhaqa=06/1443

     اس آیت کے ابتدائی حصے میں مطلقہ کی عدت وغیرہ سے متعلق احکام ہیں اور اخیر حصے میں میاں بیوی میں سے ہر ایک کے دوسرے پر جو حقوق ہیں نیز شوہر کو بیوی پر جو ایک گونہ برتری حاصل ہے، اس کا اجمالی ذکر ہے، معارف القرآن (1/545-553) (از حضرت مولانا مفتی محمد شفیع صاحب رحمہ اللہ) میں اس آیت میں مذکور تمام امور بالخصوص زوجین کے حقوق سے متعلق بہت تفصیلی تشریح موجود ہے، آپ اس کا مطالعہ کرڈالیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند