• عقائد و ایمانیات >> قرآن کریم

    سوال نمبر: 52259

    عنوان: میرے بستر کے ساتھ میز ہے ، کیا میں اس پہ قرآن پاک رکھ سکتاہوں

    سوال: (۱) مجھے یہ معلوم کرنا ہے کہ کیا سعودی لوگ قرآن پاک کا احترام کرتے ہیں یا اس کو صرف ایک کتاب سمجھتے ہیں؟ میں نے سناہے کہ مسجد نبی اور مسجد حرام میں جہاں قرآن پاک رکھے جاتے ہیں وہ جگہ بہت نیچے ہوتی ہے، ہم لوگ تو قرآن پاک کو اونچی جگہ رکھتے ہیں ، کیا ایسا کرنا بے ادبی ہے؟ (۲) میرے بستر کے ساتھ میز ہے ، کیا میں اس پہ قرآن پاک رکھ سکتاہوں کہ جب دل کیا وہاں سے اٹھا اور پھر پڑھ کہ واپس رکھ دیا․․․․کیوں کہ کچھ لوگ کہتے ہیں کہ یہ کتاب پڑھنے اور عمل کے لیے ہیں ، اس کی طرف پیٹھ ہو یا وہ تھوڑی نیچی جگہ پر پڑا ہو تو بے ادبی نہیں ہوتی ہے․․․حدیث کی روشنی میں رہنمائی فرمائیں۔

    جواب نمبر: 52259

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 771-274/L=7/1435-U قرآن کریم ایک عام کتاب کی طرح نہیں، ایسی جگہ بیٹھنا کہ قرآن کریم اس جگہ سے نیچے رکھا ہو یا اس کی طرف پشت کرنا خلاف ادب ہے لا تقعد ما علی مکانٍ أرفع مما علیہ القرآن (حیاة المسلمین: ۵۴) وفي الہندیة: لا یلقی في موضع یخل بالتعظیم (عالمگیري: ۵/۳۲۴)اگر میز پر قرآن پاک رکھنے میں اس کی طرف پشت ہو یا اس کے نیچے ہونے کا اندیشہ ہو تو وہاں قرآں شریف نہ رکھیں، حرمین شریفین میں قرآن کریم رکھنے کی جگہیں بنی ہوئی ہیں، جہاں قرآن رکھے جاتے ہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند