• عقائد و ایمانیات >> قرآن کریم

    سوال نمبر: 179845

    عنوان:

    بڑی عمر میں حافط ہونے کے لیے کیا طریقہ اختیار کیا جائے ؟

    سوال:

    میری عمر ۴۳سال ہے، چونکہ میں نے کچھ بڑی بڑی سورتیں یاد کی ہیں اللہ کی مدد و عنایت سے ، اب میرا شوق ہے کہ میں پورا قرآن مجید حفظ کروں، اس اعتبار سے کچھ سوالات ہیں؛ (۱) کیا یہ ممکن ہے اس عمر میں حافظ ہونا؟(۲) اگر ہاں تو کیسے اور کونسااعمل اپنایا جائے جس سے آسانی سے یاد ہوجائے؟(۳) میں پیشہ سے ایک ملازم ہوں تو قرآن تو یاد کرنے کے لیے کم سے کم کتنا وقت ایک دن میں صرف کرنا چاہئے؟

    اللہ رب العزت سے دعا ہے کہ آپ کو بہترین جزائے خیر عطا فرمائے اور آپ کی محنت کو قبول کرے ، آمین۔

    جواب نمبر: 179845

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:34-33/sn=2/1442

     (۱) جی ہاں! اگر محنت کی جائے گی تو حفظ قرآن کی تکمیل اس عمر میں بھی ممکن ہے ۔

    (۲،۳) آپ قریب کے کسی اچھے اور باعمل حافظ سے رابطہ کریں، اور ان سے وقت لے کر روزانہ کچھ مقدار (ایک دو صفحے ) انھیں پابندی سے سنائیں، اگر آپ کا حافظہ اچھا ہے تو اگر آپ روزانہ ڈیڑھ دو گھنٹے قرآن کریم یاد کرنے میں صرف کریں گے تو انشاء اللہ کافی ہوجائے گا۔ واضح رہے کہ روزانہ ایک مرتبہ پڑھا ہوا حصہ ضرور دہرا لینا چاہیے خصوصا شروع شروع میں ؛ تاکہ پچھلا بھی یاد رہے ۔ اگر یاد کرنے میں دشواری ہو تو آپ اپنے استاذ(حافظ صاحب جن کا آپ انتخاب کریں گے ) سے بتلاکر رہنمائی حاصل کرلیں نیز مکمل تفصیل لکھ کر یہاں سے بھی معلوم کرسکتے ہیں ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند