• متفرقات >> تصوف

    سوال نمبر: 9534

    عنوان:

    میں سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ کی حقیقت جاننا چاہتا ہوں؟چند سالوں سے میں اس سلسلہ کا گرویدہ ہورہا ہوں۔ کچھ لوگوں نے مجھ کو بتایا کہ یہ لوگ غلط ہیں اور جو کچھ یہ لوگ تصوف کے تعلق سے کررہے ہیں وہ شرک اور بدعت ہے۔ میں ذاتی طور پر اس میں کوئی غلطی نہیں پاتا ہوں کیوں کہ وہ لوگ سختی سے سنت او رشریعت کی اقتدا کرتے ہیں اور وہ لوگ اپنے آپ کو دیوبند کے مکتبہ فکر سے بتاتے ہیں۔ اب میں شک کی حالت میں ہوں اور نہیں جانتا ہوں کہ کیا کروں؟ میں مخلص ہوں اور نیک لوگوں کے نقش قدم کی اقتداء کرنا چاہتا ہوں۔ میری آپ سے درخواست ہے کہ سنت اور شریعت کے مطابق میری رہنمائی کریں تاکہ میں اس الجھن سے دور ہوجاؤں۔ اگر ممکن ہوسکے تو حوالہ بھی عنایت کریں۔

    سوال:

    میں سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ کی حقیقت جاننا چاہتا ہوں؟چند سالوں سے میں اس سلسلہ کا گرویدہ ہورہا ہوں۔ کچھ لوگوں نے مجھ کو بتایا کہ یہ لوگ غلط ہیں اور جو کچھ یہ لوگ تصوف کے تعلق سے کررہے ہیں وہ شرک اور بدعت ہے۔ میں ذاتی طور پر اس میں کوئی غلطی نہیں پاتا ہوں کیوں کہ وہ لوگ سختی سے سنت او رشریعت کی اقتدا کرتے ہیں اور وہ لوگ اپنے آپ کو دیوبند کے مکتبہ فکر سے بتاتے ہیں۔ اب میں شک کی حالت میں ہوں اور نہیں جانتا ہوں کہ کیا کروں؟ میں مخلص ہوں اور نیک لوگوں کے نقش قدم کی اقتداء کرنا چاہتا ہوں۔ میری آپ سے درخواست ہے کہ سنت اور شریعت کے مطابق میری رہنمائی کریں تاکہ میں اس الجھن سے دور ہوجاؤں۔ اگر ممکن ہوسکے تو حوالہ بھی عنایت کریں۔

    جواب نمبر: 9534

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1952=1816/ د

     

    اصل چیز اتباع شریعت اور پابندی سنت ہے اس پر مداومت اور استقامت کے لیے نیز روحانی طاقت کو قوی کرنے کے لیے مشائخ طریقت نے مختلف طریقے تعلیم وتذکیر اصلاح نفس کے تجویز کیے ہیں جو طریقہ خواجہ بہاوٴ الدین نقشبندی رحمہ اللہ نے کی طرف منسوب ہے اسے نقشبندیہ کہتے ہیں، پھر اس سلسلہ کے بعض حضرات کو نسبت اور فیض روحانی طور پر براہ راست رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے حاصل ہوا ہے، ایسے مشائخ کو اویسی کہتے ہیں۔

    نقشبندیہ سلسلہ: مشائخ طریقت کا معروف سلسلہ ہے، تصوف درحقیقت اصلاح نفس کا نام ہے یعنی اخلاق رذیلہ دور ہوجائیں، اخلاق حمیدہ پیدا ہوجائیں، شریعت وسنت پر عمل کرنا آسان ہوجائے اس مقصد کے لیے اصلاح نفس کا جو طریقہ اختیار کیا جاتا ہے، اسے تصوف کہتے ہیں اس لیے بعض علماء نے تصوف کی تعریف تعمیر الظاہر والباطن سے کی ہے۔

    اگر اس سلسلہ کے بزرگ خود بھی متبع سنت اور پابند شریعت ہیں اور مثالی اہل حق علماء انھیں صحیح سمجھتے ہیں تو آپ اُن سے اصلاحی تعلق قائم کرسکتے ہیں۔ سلسلہ نقشبندیہ ودیگر سلاسل کی تفصیل جاننے کے لیے تذکرہ مشائخ نقشبند موٴلفہ مولانا محبوب احمد قمرالزماں رحمہ اللہ کا مطالعہ کریں، یا تعلیم الدین مصنفہ حکیم الامت مولانا اشرف علی تھانوی علیہ الرحمة۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند