• متفرقات >> تصوف

    سوال نمبر: 22918

    عنوان: کیا سلوک میں جو پیر مرید کا طریقہ ہے یہ قرآن حدیث سے ثابت ہے؟ خاص کرکے سلوک میں جو خلافت کا طریقہ ہے قرآن حدیث سے اس کی دلیل کیا ہے؟ اگر آپ یہ مجھے بتائیں تو اللہ آپ کو جزائے خیر دے گا۔

    سوال: کیا سلوک میں جو پیر مرید کا طریقہ ہے یہ قرآن حدیث سے ثابت ہے؟ خاص کرکے سلوک میں جو خلافت کا طریقہ ہے قرآن حدیث سے اس کی دلیل کیا ہے؟ اگر آپ یہ مجھے بتائیں تو اللہ آپ کو جزائے خیر دے گا۔

    جواب نمبر: 22918

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م):939=939-6/1431

    جی ہاں قرآن وحدیث سے ثابت ہے، یَا اَیُّہَا النَّبِیُّْ اِذَا جَآئَکَ الْمُؤْمِنٰتُ یُبَایِعْنَکَ عَلٰی اَنْ لَا یُشْرِکْنَ بِاللّٰہِ شَیْئًا وَلَا یَسْرِقْنَ وَلَا یَزْنِیْنَ وَلَا یَقْتُلْنَ اَوْلَادَہُنَّ وَلَا یَأْتِیْنَ بِبُہْتَانٍ یَفْتَرِیْنَہُ بَیْنَ اَیْدِیْہِنَّ وَاَرْجُلِہِنَّ وَلَا یَعْصِیْنَکَ فِیْ مَعْرُوْفٍ فَبَایِعْہُنَّ وَاسْتَغْفِرْ لَہُنَّ اللّٰہَ اِنَّ اللّٰہَ غَفُوْرٌ رَحِیْمٌ (سورہٴ ممتحنہ)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند