• معاشرت >> طلاق و خلع

    سوال نمبر: 43647

    عنوان: جس عورت كو بچہ پیدا نہ ہو اس كو طلاق دے كر دوسرا نكاح كرنا؟

    سوال: کسی کی بیوی کی پیدائشی طور پر بچہ دانی چھوٹی ہے کہ حمل نہیں ٹھرتا تو ایسی عورت کو طلاق دیکر دوسرا نکاح کرنا کیساہے، کیوں کہ اس بیوی کے ہوتے ہوئے کوئی نکاح کرنے پر تیار نہیں ہے؟

    جواب نمبر: 43647

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 382-382/M-3/1434 اولاد کا عطا کرنا اللہ تعالی کے اختیارمیں ہے، یہ ضروری نہیں کہ دوسری جس عورت سے شادی کریں گے اس سے اولاد حاصل ہوہی جائے، بیوی کی بچہ دانی چھوٹی ہونے کی وجہ سے حمل نہیں ٹھہرتا تو اس کو طلاق دینے کی ضرورت نہیں، اگر اس بارے میں علاج معالجہ مفید ہوسکتا ہو تو علاج کریں اور نہیں تو اس کو بھی اپنی زوجیت میں باقی رکھتے ہوئے دوسری شادی کرلیں، ایسا نہیں ہے کہ اس بیوی کے ہوتے ہوئے کوئی عورت نکاح کے لیے تیار نہ ہوگی، اگر اللہ نے چاہا تو دوسری سے اولاد کی تمنا پوری ہوجائے گی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند