• معاشرت >> طلاق و خلع

    سوال نمبر: 31199

    عنوان: کہ اگر میں کسی لڑکی کو تین گواہوں کی موجودگی میں یہ کہوں کہ میں صرف تم سے شادی کروں گا اور میں نے اس دنیا کی تمام لڑکیوں کو طلاق دیدی۔

    سوال: مجھے کسی نے بتایا ہے اور یہ سوال میں نے اپنی زندگی میں پہلی بار سنا ہے کہ اگر میں کسی لڑکی کو تین گواہوں کی موجودگی میں یہ کہوں کہ میں صرف تم سے شادی کروں گا اور میں نے اس دنیا کی تمام لڑکیوں کو طلاق دیدی۔ اب اگر میری شادی کسی وجہ سے اس لڑکی سے نہیں ہوتی ہے جس سے میں نے کہا تھا کہ میں صرف تم سے شادی کروں گا․․․․․بلکہ میری شادی کسی دوسری لڑکی سے ہوتی ہے تو کیا میرا نکاح ہوتے ہی طلاق واقع ہوجائے گی؟ ایسا ہے تو براہ کرم، قرآن وحدیث کی روشنی میں جواب دیں۔

    جواب نمبر: 31199

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(د): 637=387-4/1432 ”میں صرف تم سے شادی․․․․ طلاق دیدی“۔ اگر بعینہ یہ الفاظ کہے تھے تو شادی کرنے کے بعد بیوی پر طلاق واقع نہیں ہوگی۔ کچھ اور الفاظ کہے ہوں تو انھیں لکھ کر دوبارہ معلوم کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند