• معاشرت >> طلاق و خلع

    سوال نمبر: 21201

    عنوان:

    میں آپ یہ پوچھنا چاہتی ہوں کہ میں یہ بتایا ہے کہ fatwa ID=18839 آپ نے میرے شوہر کے عقیدے شرکیہ ہیں، کیا میرا نکاح میرے شوہر سے قائم ہے؟ یا ختم ہوگیا ہے، اگر ختم ہوگیا ہے تو کیا عدت بھی گزارنی ہوگی شوہر کے گھر؟

    سوال:

    میں آپ یہ پوچھنا چاہتی ہوں کہ میں یہ بتایا ہے کہ fatwa ID=18839 آپ نے میرے شوہر کے عقیدے شرکیہ ہیں، کیا میرا نکاح میرے شوہر سے قائم ہے؟ یا ختم ہوگیا ہے، اگر ختم ہوگیا ہے تو کیا عدت بھی گزارنی ہوگی شوہر کے گھر؟

    جواب نمبر: 21201

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م): 545=545-4/1431

     

    آپ کے شوہر نے اگر کوئی طلاق نہیں دی ہے اور نہ خلع کا واقعہ پیش آیا ہے، تو ایسی صورت میں آپ کا نکاح آپ کے شوہر سے قائم ہے، ختم نہیں ہوا اور جب نکاح برقرار ہے تو عدت گزارنا صحیح نہیں۔ آپ کے شوہر کو اپنے شرکیہ عقائد سے توبہ واستغفار لازم ہے، شوہرکے مذکورہ عقائد کی وجہ سے اس کے ارتداد کا قطعی حکم نہیں لگایا جاسکتا، اسی لیے ازخود نکاح فسخ نہیں ہوگا، ہاں اگر آپ کو شبہ ہے کہ شوہرکے عقائد ارتداد کی حد تک پہنچے ہوئے ہیں، تو اس سلسلے میں مقامی یا قریبی شرعی پنچایت میں معاملہ پیش کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند