• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 49283

    عنوان: قضائے حاجت کے بعداگر شک ہو کہ کوئی قطرہ وغیرہ نکلا ہے تو اس کو یقین میں کس طرح لیا جاسکتاہے؟ کیوں کہ اس وقت تو پہلے وہ جگہ گیلی ہے، اس پہ پانی لگا ہوتاہے؟

    سوال: قضائے حاجت کے بعداگر شک ہو کہ کوئی قطرہ وغیرہ نکلا ہے تو اس کو یقین میں کس طرح لیا جاسکتاہے؟ کیوں کہ اس وقت تو پہلے وہ جگہ گیلی ہے، اس پہ پانی لگا ہوتاہے؟

    جواب نمبر: 49283

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1511-1511/M=1/1435-U بیت الخلاء میں چیک کرلیں اگر قطرہ نکلنے کا احساس ہوا ہے اور دیکھنے کے بعد عضو کے سوراخ میں تری بھی نظر آئی تو نکلنے کا یقین کیا جاسکتا ہے اور اگر قطرہ نکلنے کا بالکل بھی احساس نہیں ہوا، اور عضو دیکھ کر بھی یہی گمان ہوتا ہے کہ یہ پیشاب کا قطرہ نہیں ہے تو صرف شک کی وجہ سے پیشاب کا قطرہ یقینی طور پر نہیں کہا جاسکتا اور بلاوجہ شک اور وسوسہ میں پڑنے کی ضرورت نہیں، قطرہ کے یقین کی صورت میں اسے دھولینا ضروری ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند