• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 33942

    عنوان: معتاده كو اگر خلاف معمول حیض آئے تو كیا حكم هے؟

    سوال: ایک عورت کے ساتھ یہ مسئلہ پیش آیا کہ اس کو 17/ جون 2011/ کو حیض آنا شروع ہوا اور 25/ جولائی کو ختم ہوا، یہ ہر مہینہ کی اس کی عادت ہے ۔ پھر 5/ جولائی کو حیض آناشروع ہوا اور 14/جولائی کو ختم ہوا، دو دن کے بعد یعنی 17/ جولائی پھر حیض شروع ہوگیااور اسی دن ختم ہوگیا، سوال یہ ہے کہ ان دنوں کے بارے میں کیا حکم ہوگا؟ براہ کرم، تفصیل سے بتائیں۔

    جواب نمبر: 33942

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ب): 1545=1253-10/1432 جب اس عورت کی عادت ہرماہ میں ۷/ دن حیض آنے کی ہے تو وہ اپنی عادت کے مطابق ہرماہ میں ۷/ دن حیض کے شمار کرے ارو پھر غسل کرکے نماز روزہ کرے، ۷/دن کے علاوہ جتنے دن خون آئے گا وہ بیماری کا خون سمجھا جائے گا، ۱۴/ جولائی کو ختم ہوکر جو دو دن کے بعد ۱۷/ جولائی کو پھر خون آیا تو یہ خون حیض کا نہیں۔ یہ بیماری کا خون ہے۔ دو حیضوں کے درمیان کم ازکم ۱۵/ دن پاکی کے ہونے ضروری ہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند