• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 24729

    عنوان: برسات کے موسم میں میونسپلٹی کی زیر نگرانی جو پانی (ٹیپ واٹر) عوام کے گھروں میں بذریعہ نل (ہینڈ پمپ ) بھیجا جاتاہے ، اگر وہ اتنا گندہ ہو کہ اس کا رنگ بدل گیا ہو تو کیا اس پانی سے وضواور غسل کیا جاسکتاہے؟

    سوال: برسات کے موسم میں میونسپلٹی کی زیر نگرانی جو پانی (ٹیپ واٹر) عوام کے گھروں میں بذریعہ نل (ہینڈ پمپ ) بھیجا جاتاہے ، اگر وہ اتنا گندہ ہو کہ اس کا رنگ بدل گیا ہو تو کیا اس پانی سے وضواور غسل کیا جاسکتاہے؟

    جواب نمبر: 24729

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م): 1248=1248-8/1431

    پانی کی رقت (پتلا پن) اور سیلان (بہاوٴ) میں اگر تبدیلی نہیں آئی ہے جیسا کہ عموماً ہینڈ پمپ کے پانی میں ہوتا ہے کہ محض گدلا ہوجاتا ہے، تو صرف وصف بدلنے کی وجہ سے جب کہ وہ پاک چیز ملنے سے ہوا ہو، یعنی ریت، مٹی وغیرہ سے تو اس سے وضو اور غسل کے نادرست ہونے کا حکم نہیں بلکہ وضو اور غسل درست رہے گا۔ یجوز الطہارة بماء خالطہ شيء طاہر فغیر أحد أوصافہ إلخ (ہدایہ)



    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند