• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 22420

    عنوان: حضرت! مجھے پیشاب میں قطرے آتے ہیں جس کی وجہ سے نماز پڑھنے میں دشواری ہوتی ہے ، کیوں کہ کپڑے ناپاک ہوجاتے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ کیا میں وضو کرتے وقت اس جگہ کو دھو کر نماز پڑھ سکتاہوں؟ کیوں کہ میں نے ایک مفتی سے پوچھا تھا تو انہوں نے مجھے یہ بتا یا تھا ۔ تب ہی سے میں جب بھی پیشاب کے بعد نمازپڑھتا ہوں تو اس جگہ کو دھو لیتا ہوں ، کیا اس طرح میری نماز ہوجائے گی؟ اور اگر آپ کے پاس اس کا کوئی علاج ہو تو ضرور رہنمائی فرمائیں۔

    سوال: حضرت! مجھے پیشاب میں قطرے آتے ہیں جس کی وجہ سے نماز پڑھنے میں دشواری ہوتی ہے ، کیوں کہ کپڑے ناپاک ہوجاتے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ کیا میں وضو کرتے وقت اس جگہ کو دھو کر نماز پڑھ سکتاہوں؟ کیوں کہ میں نے ایک مفتی سے پوچھا تھا تو انہوں نے مجھے یہ بتا یا تھا ۔ تب ہی سے میں جب بھی پیشاب کے بعد نمازپڑھتا ہوں تو اس جگہ کو دھو لیتا ہوں ، کیا اس طرح میری نماز ہوجائے گی؟ اور اگر آپ کے پاس اس کا کوئی علاج ہو تو ضرور رہنمائی فرمائیں۔

    جواب نمبر: 22420

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(د):844=672-6/1431

    اس حصہ کو دھولینے سے نماز ادا کرنا درست ہوجائے گا۔ البتہ یہ بات ذہن میں رہنی چاہیے کہ وضو کرنے کے بعد قطرہ آجانے سے وضو ٹوٹ جاتا ہے تو پھر وضو دوبارہ کرنا پڑے گا۔ لہٰذا آپ دو باتوں کا خیال کرلیں: (۱) پیشاب کرنے کے کچھ دیر بعد (جب کہ چلنے پھرنے سے قطرے آنے بند ہوجائیں) وضو کریں۔ (۲) اگر نماز کے لیے پاک کپڑا علاحدہ رکھ سکیں کہ خاص نماز کے وقت اسے بدل لیا کریں تو بہتر ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند