• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 19550

    عنوان:

    کیا مباشرت کے بعد غسل کرنا واجب ہے؟ میں نے سنا ہے کہ امام شافعی کے نزدیک غسل واجب نہیں تو کیا حنفی لوگ بھی اس پر عمل کرسکتے ہیں؟

    سوال:

    کیا مباشرت کے بعد غسل کرنا واجب ہے؟ میں نے سنا ہے کہ امام شافعی کے نزدیک غسل واجب نہیں تو کیا حنفی لوگ بھی اس پر عمل کرسکتے ہیں؟

    جواب نمبر: 19550

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل): 186=35tl-2/1431

     

    صحبت کے بعد تمام ائمہ کے نزدیک غسل واجب ہوجاتا ہے، صحبت کے بعد بغیر غسل نمازو تلاوت کرنا کسی بھی امام کے نزدیک جائز نہیں: ?عن أبي ھریرة عن النبي صلی اللہ علیہ وسلم قال: إذا قعد بین شعبھا الأربع وألزق الختان بالختان فقد وجب الغسل? (أبوداوٴد) وفي بذل المجہود: ?قال الترمذي: وھو قول أکثر أہل العلم من أصحاب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم منہم أبوبکر وعثمان وعلي وعائشة رضي اللہ عنہم والفقہاء من التابعین ومن بعدہم مثل سفیان الثوري والشافعي وأحمد وإسحاق قلت وھو مذہب أبي حنیفة رحمہ اللہ وأصحابہ? (بذل المجہود: ۱۳۳)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند