• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 165353

    عنوان: كنویں میں بلی كا پیشاب گرجائے تو كیا حكم ہے؟

    سوال: سوال ہے کہ کیا کنوے میں بلی یا کتے کاپیشاب گرجائے تو ایسی صورت میں شریعت کا کیا حکم ہے ؟ کنوے کا سائز ۳فٹ ہے ، پیشاب یا یا لیٹرنگ تھوڑا یا زیادہ اس کی وضاحت فرمائیں۔

    جواب نمبر: 165353

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 48-44/D=2/1440

    بلی یا کتے کا پیشاب یا لیٹرنگ تھوڑا گرے یا زیادہ، کنوے کا پورا پانی ناپاک ہو جائے گا اور اس صورت میں کنوے کا سارا پانی نکالا جائے گا۔ إذا وقعت نجاسة فی بئر دون القدر الکثیر أو مات فیہا حیوان دموي وانتفخ أو تفسخ ینزح کل ماء ہا بعد إخراجہ، شامی: ۱/۳۶۶، ط: زکریا ۔

    جس کنویں کا سائز ۳/ فٹ ہے وہ دَہ دَردَہ نہیں ہے تھوڑی نجاست گرنے سے بھی اس کا پانی ناپاک ہو جائے گا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند