• عبادات >> طہارت

    سوال نمبر: 11500

    عنوان:

    میں یہ معلوم کرنا چاہتاہوں کہ اگر کسی کو غسل لیتے وقت اس کی نجاست باہر آ جائے او رپھر غسل لے لے اور غسل لینے کے بعد وہ نماز پڑھ لے اورپھر سے ناپاکی کی حالت میں ہو جائے کہ پتہ نہ چلا ہو یا ایک آدھا قطرہ نکل آیا ہو تو ایسی حالت میں وہ پاک ہے یا نہیں؟

    سوال:

    میں یہ معلوم کرنا چاہتاہوں کہ اگر کسی کو غسل لیتے وقت اس کی نجاست باہر آ جائے او رپھر غسل لے لے اور غسل لینے کے بعد وہ نماز پڑھ لے اورپھر سے ناپاکی کی حالت میں ہو جائے کہ پتہ نہ چلا ہو یا ایک آدھا قطرہ نکل آیا ہو تو ایسی حالت میں وہ پاک ہے یا نہیں؟

    جواب نمبر: 11500

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 453=323/ل

     

    صورتِ مسئولہ میں اگر غسل کرنے اور نماز ادا کرلینے کے بعد منی کا کچھ قطرہ نکل آیا تو اس پر دوبارہ غسل واجب نہیں ہے، بس ناپاکی کو کپڑے سے زائل کردے: أما لو خرج منہ بعد النوم أو البول أو المشي فلا یجب علیہ الغسل اتفاقًا (مجمع الأنھر: ۱/۳۹، ط: بیروت)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند