• عبادات >> صوم (روزہ )

    سوال نمبر: 61027

    عنوان: اعتکاف میں غسل مسنون کا حکم

    سوال: کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ اعتکاف مسنون میں معتکف غسل مسنون کے لئے باہر جا سکتا ہے یا نہیں؟اگر نہیں تو اس میں اگر اعتکاف شروع کرنے سے قبل غسل مسنون کے لئے باہر نکلنے کی نیت کرلے تو کیاحکم ہوگا؟

    جواب نمبر: 61027

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 663-663/Sd=11/1436-U اعتکاف مسنون میں معتکف کے لیے مسنون غسل کی وجہ سے مسجد شرعی کے باہر نکلنا جائز نہیں ہے اور اگر شخص مسنون اعتکاف شروع کرنے سے پہلے ہی غسل مسنون کے لیے باہر نکلنے کی نیت کرلے، تو ایسی صورت میں بہت سے مفتیان کرام نے باہر نکلنے کی گنجائش دی ہے؛ لیکن بعض مفتیان کرام کی رائے اس صورت میں بھی عدم جواز ہی کی ہے، لہٰذا احتیاط اسی میں ہے کہ اس صورت میں بھی باہر نہ نکلا جائے۔ (دونوں مسئلوں کی تحقیق کے لیے دیکھیے: حاشیہ ”اعتکاف کے فضائل ومسائل“ ص: ۱۸۸-۱۹۲، ۱۹۶-۱۹۹)۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند