• عبادات >> صوم (روزہ )

    سوال نمبر: 54372

    عنوان: معمول کے مطابق روزہ کی حالت میں چہرے دھوتے ہوئے میرے بھائی نے تھوکا تو ان کو اس میں خون نظر آیا

    سوال: معمول کے مطابق روزہ کی حالت میں چہرے دھوتے ہوئے میرے بھائی نے تھوکا تو ان کو اس میں خون نظر آیا ، یہ معلوم ہونے پر کہ جبڑے سے خون نکل رہا ہے تو وہ مسلسل تھوکتے رہے تاکہ خون اند چلا نہ جائے ۔ اس صورت حال میں دو شبہات ہیں : (۱) ممکن ہے کہ وہ تھوکے کے ساتھ خون نکل گیا ہو؟ (۲) وہ تھوک نگلنے سے مسلسل بچتے رہے ، لیکن ان کو یقین نہیں ہے کہ آیا وہ تھوک سے بچنے میں کامیاب رہے یا نہیں؟ اور ان کو شبہ ہے کہ کچھ خون اندر چلا گیا ہے۔ سوال یہ ہے کہ کیا روزہ ہوگیا؟ اگر روزہ نہیں ہوا تو کیا اس کی قضا ہے یاکفارہ؟

    جواب نمبر: 5437201-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1536-1267/B=10/1435-U محض شک کی وجہ سے روزہ نہیں فاسد ہوگا، اس لیے اس روزہ کی نہ تو قضا واجب ہے نہ ہی کفارہ واجب ہے، آپ کا روزہ صحیح ہوگیا، احتیاطا ایک روزہ کی قضا کرلیں تو اس میں کچھ مانع نہیں بلکہ بہتر ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند