• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 69080

    عنوان: نماز میں آنکھیں بند كرنا جائز ہے یا ناجائز ہے؟

    سوال: اگر میں نماز میں اللہ تعالی کی طرف توجہ پیدا کرنے کے لیے آنکھیں بند کردوں کیا یہ جائز ہے یا ناجائز ہے؟پہلے میں نے پڑھا تھا کہ نماز کے دوران آنکھیں بند کرنا مکروہ ہے۔

    جواب نمبر: 69080

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1055-1131/SN=12/1437

    فقہاء نے تصریح کی ہے کہ نماز کے دوران آنکھیں بند کرنا مکروہ تنزیہی ہے؛ لیکن اگر کوئی شخص اس مقصد سے آنکھیں بند کرے؛ تاکہ دلجمعی اور خشوع حاصل ہو، ادھر ادھر کی چیزوں پر نظر پڑنے کی وجہ سے دھیان منتشر نہ ہوتو اس میں کوئی حرج نہیں ہے؛ لہذا آپ مذکور فی السوال مقصد کے لیے نماز میں آنکھیں بند کرسکتے ہیں، نماز مکروہ نہ ہوگی۔ وکرہ ․․․․․ وتغمیض عینیہ للنہي إلا لکمال الخشوع (درمختار) وقال الشامی: ․․․․․ ثم الظاہر أن الکراہة تنزیہیة ․․․․ قولہ إلا لکمال الخشوع بأن خاف فوت الخشوع بسبب روٴیة ما یفرق الخاطر فلایکرہ؛ بل قال بعض العلماء: إنہ الأولی، ولیس ببعید، حلیة وبحر (درمختار مع الشامی ۲/۴۱۳، ۴۱۴، ط: زکریا)۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند