• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 609240

    عنوان:

    امام دوسری منزل میں اور مقتدی پہلی منزل میں ہوں تو نماز درست ہوگی یا نہیں؟

    سوال:

    سوال : حضرت مفتی صاحب ایک جمعہ مسجد جوتین منزلہ ہے اورمسجد قدیم ہونے کی وجہ سے مسجد کی دیوار اور مہرب کمزر ہوگئے تو ان دونوں اچھی طرح بنانے کے لیے ام چل رہا ہے ، اس لیے امام صاحب دوسری منزل میں نماز جمعہ کی امامت کر رہے ہیں اور مقتدی پہلی دوسری تیسری منزل کی مقتدی امام صاحب اقتدا کر رہے ہیں اب پہلی منزل کا مقتدی کی نماز ہوگا یا نہیں؟براہ کرم، جواب دیکر مہربانی فرمائیں؟

    جواب نمبر: 609240

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 538-273/B-Mulhaqa=06/1443

     جی ہاں! پہلی منزل میں کھڑے ہونے والے مقتدی حضرات کی نماز ہوجائے گی، پوری مسجد مکانِ واحد کے حکم میں ہوتی ہے، اس میں فاصلہ یا منزل کا اختلاف مانع اقتداء نہیں ہے۔ ولو قام علی سطح المسجد واقتدی بإمام فی المسجد، إن کان للسطح باب فی المسجد ولا یشتبہ علیہ حال الإمام یصح الاقتداء الخ (فتاوی ہندیة: 1/88، الفصل الخامس، کتاب الصلاة، مطبوعہ: مکتبہ زکریا، دیوبند)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند