• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 607440

    عنوان:

    نماز ظہر دیر سے کیوں ادا کرتے ہیں؟

    سوال:

    سوال : دیو بند ۔سنی، بریلوی لوگوں میں تضاد پایا جاتا ہے کہ وہ نماز یا اذان کے وقت گھری کے مطابق ٹھیک ہوتے ہیں مگر عملی طور پر آگے پیچھے ہوتے ہیں؟جیسے کہ اگر گھڑی پر وقت ۱بجے ظہر کی نماز کا ہو تو دیوبند ۱بجے اذان دیتے ہیں اور باقی ۲دوسرے ۱۵منٹ پہلے اذان دے چکے ہوتے ہیں۔ اور ۱بجے وہ باجماعت ظہر کی نماز ادا کرتے ہیں۔اس کی فر ق کی وجوہات، قرآن و حدیث کی روشنی میں واضح بیان کریں؟اگر یہ فرق فرقے کی بنیاد ہے تو واضح کریں۔ حدیث مبارکہ می|ں آتا ہے کہ اول وقت میں نماز ادا کرنا بہتر ہے ۔

    جواب نمبر: 607440

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 379-286/M=04/1443

     دوسرے فرقے کے لوگ جو کچھ کرتے ہیں اس کی دلیل اُن سے معلوم کریں، ہم اہل دیوبند بحمد اللہ قرآن و حدیث کے مطابق عمل کرتے ہیں۔ حدیث میں ظہر کی نماز گرمیوں میں دیر سے (ابراد کے ساتھ) پڑھنے کا حکم وارد ہے، چنانچہ اہل دیوبند گرمیوں میں ظہر ٹھنڈا کرکے پڑھتے ہیں اور سردیوں میں اول وقت پڑھ لیتے ہیں۔ ظہر کی اذان ایک بجے دینا خلاف سنت نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند