• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 607114

    عنوان:

    دینی مجالس کے بعد مسجد نہ جاکر وہیں جماعت سے نماز پڑھ لینا کیسا ہے؟

    سوال:

    سوال : مفتی صاحب آپ سے ایک مسئلہ میں رہنمائی کی درخواست ہے کسی جگہ دینی نسبت سے لوگ جمع ہوتے ہیں جہاں تعلیم و تربیت اور بیان وغیرہ ہوتا ہے درمیان میں نمازوں کا وقت ہوتا ہے تو نماز بھی باجماعت وہیں پڑھ لی جاتی ہے تو ایسی جگہ یا ایسے وقت میں مسجد کی جماعت چھوڑ کر اسی جگہ ۔ نماز پڑھی جاسکتی ہے اور کیا نماز میں جماعت کا وجوب مسجد کے ساتھ خاص ہے یا کسی بھی جگہ چند لوگ مل کر باجماعت نماز پڑھ لیں تو کافی ہوجائے گا۔ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں عین نوازش ہوگی

    جواب نمبر: 607114

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 319-261/M=04/1443

     جائز ہے؛ البتہ مسجد میں نماز پڑھنے کا ثواب نہیں ملے گا۔ احادیث میں ترک جماعت پر وارد وعیدوں کی روشنی میں مسجد کی جماعت کا وجوب معلوم ہوتاہے، اس لیے بلاعذر شرعی مسجد کی جماعت ترک کرنے سے اجتناب کرنا چاہئے۔ تفصیل کے لئے دیکھیں: (إعلاء السنن: 4/186، باب وجوب إتیان الجماعة في المسجد عند عدم العلة وعدم کونہا شرطا لصحة الصلاة)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند