• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 60165

    عنوان: اگر قصر کی مسافت جو کہ پچھتر کلو میٹر غالباً ہوگئی ہے اور آٹھ روز کو مستورات اپنے والدین کے گھر پر آئی ہے تو کیا قصر کی نماز پڑھنا پڑے گی یا نہیں؟

    سوال: اگر قصر کی مسافت جو کہ پچھتر کلو میٹر غالباً ہوگئی ہے اور آٹھ روز کو مستورات اپنے والدین کے گھر پر آئی ہے تو کیا قصر کی نماز پڑھنا پڑے گی یا نہیں؟

    جواب نمبر: 60165

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 513-513/Sd=9/1436-U مسافت سفر پچھتر نہیں سوا ستتر(77.25) کلو میٹر ہے، صورت مسئولہ میں اگر مستورات شادی شدہ اور وہ اپنے میکے سے رخصت ہوکر سسرال میں باقاعدہ قیام پذیر ہے، سسرال میں اس کا قیام عارضی نہیں ہے، تو وہ میکے (اپنے گھر) آنے کے بعد پندرہ دن سے کم ٹھہرنے کی صورت میں قصر کرے گی، بشرطیکہ اس کے سسرال سے میکے کی مسافت کم ازکم سواستتر کلومیٹر ہو۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند