• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 48653

    عنوان: میری ظہر کی نماز نوکری کی وجہ سے روز چھوٹ جاتی ہے تو میں کیا کروں ؟

    سوال: (۱) میری ظہر کی پہلی چار رکعات نوکری کی وجہ سے روز چھوٹ جاتی ہے تو میں کیا کروں ؟ (۲) سوال یہ ہے کہ کیا بینک انٹریسٹ کے پیسے سے موبائل میں بیلنس ڈال کر استعمال کرسکتے ہیں؟

    جواب نمبر: 48653

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1432-1431/N=12/1434-U (۱) ظہر میں پہلے چار رکعت سنتیں فرض سے پہلے ہی پڑھنے کی کوشش کیا کریں، اور اگر کبھی فرض سے پہلے نہ پڑھی جاسکیں تو فرض کے بعد پڑھ لیا کریں، دو رکعت سنتوں کے بعد پڑھیں یا اس سے پہلے دونوں طرح جائز ہے، البتہ افضل یہ ہے کہ دو رکعت سنتوں کے بعد پڑھیں، پہلے کی چار رکعت سنتیں بالکل نہ چھوڑیں۔ (۲) ہرگز نہیں، وہ پیسے واجب التصدق ہیں، لہٰذا بلانیت ثواب وہ سود کے پیسے غربا ومساکین ہی کو دیدیں، وہ پیسے کسی طرح اپنے استعمال میں ہرگز نہ لائیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند