• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 43643

    عنوان: خشوع خضوع نہ ہونا

    سوال: ہر وقت دل ایک حال میں نہیں رہتا، کبھی کبھی تو نماز پڑھتاہوں تو پتا ہی نہیں کیا پڑھا تب بندہ کیا کرے؟ اور آن لائن دستیاب کتابوں کے بارے میں بتا دیں جسے پڑھ کے اثر ہو۔

    جواب نمبر: 43643

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 390-390/M=3/1434 ہروقت آدمی کو ایک ہی کیفیت حاصل نہیں رہتی، بہرحال قلب میں خدا کا خوف، اللہ کا دھیان پیدا ہوجائے اس کے لیے کچھ مجاہدہ کی ضرورت ہے، نماز میں خشوع وخضوع پیدا کرنے کے لیے روزانہ دو رکعت نماز اس طور پر پڑھیں کہ خوب اچھی طرح واضح کرکے خدا کو حاضر وناظر سمجھتے ہوئے نہایت سکون ووقار کے ساتھ تکبیر تحریمہ کہیں، پھر نماز میں جو کچھ پڑھیں یا جو رکن اورواجب ادا کریں اس کو نہایت دھیان سے ادا کریں، ذہن میں اِدھر اُدھر کے خیالات آئیں تو فوراً ذہن کو نماز کی طرف موڑدیں اور اس طرح ادا کریں گویا یہ زندگی کی آخری نماز ہے، اسی کیفیت کے ساتھ ہرنماز ادا کرنے کی سعی کریں، اگر اب تک کسی شیخ سے متبع سنت بزرگ سے اصلاحی تعلق قائم نہ کیا ہو تو کرلیں اور ان کی ہدایات کے مطابق عمل کریں، اچھے ماحول میں رہیں اور اچھی کتابوں کا مطالعہ رکھیں۔:(۱) فضائل اعمال (۲) فضائل صدقات (۳) تعلیم الدین (۴) حیات المسلمین (۵) تعلیم الاسلام (۶) بہشتی زیور (۷) اسلام کیا ہے؟ (۸) شوق وطن۔ ان کتابوں کے حاصل کرنے کے لیے حضوری باغ روڈ ملتان فون 40978 پر رابطہ کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند