• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 40216

    عنوان: حلال وحرام

    سوال: (۱) کیا ایک عالم شخص ایک جاہل اور داڑھی منڈا اور کپرا ٹخنوں سے نیچے لٹکانے والے کی اقتداء کرسکتا ہے ؟ (۲) ہمارے یہاں کمپنی سے انٹرنٹ کی تار ملتی ہے اور وہ کمپنی ایک مقرر پیسے کاٹتی ہے، ہر ماہ اورآپ اپنی مرضی سے جتنا چاہے استعمال کریں ، اس میں کوئی مسئلہ نہیں ہے ان کی طرف سے ، تو مسئلہ یہ ہے کہ کیا جن کو ہم دے رہے ہیں وہ اس کا غلط استعمال کریں ؟ہمیں تو وہ صحیح اور ضروت کہہ کر لیتے ہیں ان کودینا شرعا جائز ہوگا اور کیا ان کے غلط استعمال کا ہم پر کوئی وبال تو نہیں ہوگأ۔

    جواب نمبر: 40216

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1222-875/D=8/1433 (۱) مکروہ تحریمی ہے، نماز ادا ہوجائے گی لیکن مذکورہ شخص کو امام بنانا مکروہ تحریمی ہے۔ (۲) اگر آپ کو معلوم ہے کہ وہ شخص تار کا غلط ہی استعمال کرے گا تو پھر اسے نہ دیں۔ اور اگر غلط اور صحیح دونوں طرح استعمال کرتا ہے یا آپ کو یقینی طور پر کچھ نہیں معلوم تو ایسی صورت میں آپ کے لیے دینا جائز ہے، گناہ استعمال کرنے والے پر ہوگا۔ آپ پر نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند