• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 38977

    عنوان: نماز کے دوران اگر وضو ٹوٹ جائے

    سوال: ظہر کی نماز میں ۴ سنتیں بعد میں پڑھیں جا سکتی ہیں؟ یعنی ۴ فرض ۲ سنت ۲ نفل کے بعد .. اس لیے کہ جب کبھی باہر نماز پڑھنی ہو اور وضو بار بار ٹوٹنے کا خدشہ ہو.. تو فرض تو پڑھنا کافی ہوگا؟اس کے علاوہ جن کو قبض کا مسئلہ ہو اور وضو بار بار ٹوٹے تو کتنے بار وضو کرنے کے بعد ویسے ہی یا جہاں چھوڑی نماز وہاں سے شروع کی جا سکتی؟

    جواب نمبر: 38977

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 943-649/D=6/1433 نماز کے دوران اگر وضو ٹوٹ جائے تو فوراً نماز سے باہر ہوکر وضو کرے اور جتنی نماز پڑھ چکا ہے اس پر بنا کرے تو جائز ہے البتہ از سر نو پڑھنا بہتر ہے، مسافر صرف فرائض پر اکتفا کرسکتا ہے۔ =================== جواب صحیح ہے اور ظہر میں فرض سے پہلے کی سنتیں اگر فرض سے پہلے نہ پڑھی جاسکتی ہوں تو فرض کے بعد پڑھ سکتے ہیں۔ (ن)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند