• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 32210

    عنوان: میر ا سوال یہ ہے کہ عشاء میں وتر کی نماز کے بعد حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے بیٹھ کر دورکعات نفل نماز پڑھنا ثابت ہے کہ نہیں؟

    سوال: میر ا سوال یہ ہے کہ عشاء میں وتر کی نماز کے بعد حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے بیٹھ کر دورکعات نفل نماز پڑھنا ثابت ہے کہ نہیں؟

    جواب نمبر: 3221001-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل): 883=555-6/1432 وتر کی نماز کے بعد دو رکعت نفل حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم سے بیٹھ کر پڑھنا ثابت ہے: عن عائشة أن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کان یوتر بتسع رکعات ثم أوتر بسبع رکعات ورکع رکعتین وہو جالس بعد الوتر یقرأ فیہما فإذا أراد أن یرکع قام فرکع ثم سجد (أبوداوٴد شریف: ۱/۱۹۸)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند