• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 31528

    عنوان: میں یہ جاننا چاہتاہوں کہ عشاء کی نماز رات کو بارہ بجے کے بعد پڑھی جائے تو وہ قضا ہوگی یا نہیں؟(۲) عشاء کی نماز کا وقت کب سے کب تک ہے؟(۳) اگر کوئی شخص چار رکعات نماز پڑھ کر یہ بھول جائے کہ کتنی رکعت پڑھی ہے؟

    سوال: میں یہ جاننا چاہتاہوں کہ عشاء کی نماز رات کو بارہ بجے کے بعد پڑھی جائے تو وہ قضا ہوگی یا نہیں؟(۲) عشاء کی نماز کا وقت کب سے کب تک ہے؟(۳) اگر کوئی شخص چار رکعات نماز پڑھ کر یہ بھول جائے کہ کتنی رکعت پڑھی ہے؟ اور ایک رکعت اور پڑھ کے سجدہ سہو کر لے ، اس طرح اس کی پانچ رکعات ہوگیں) توکیا سجدہ سہو سے اس کی نماز ہوجائے گی یا نہیں؟اور سلام پھیر نے کے بعد اس کو یہ یاد آجائے کہ اس نے پانچ رکعات پڑھی ہیں، تو پھر کیا کرنا ہوگا؟ براہ کرم،اس پر روشنی ڈالیں۔

    جواب نمبر: 31528

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ب): 642=540-5/1432 (۱-۲) عشاء کی نماز کا وقت سورج غروب ہونے کے ایک گھنٹہ بیس منٹ گذرنے کے بعدشروع ہوتا ہے اور صبح صادق تک رہتا ہے۔ اس وقت میں جب آپ نماز عشاء پڑھیں گے تو یہ قضا نہ ہوگی، بلکہ ادا نماز ہوگی، بارہ بجے کے بعد بھی ادا ہی ہوگی قضا نہ ہوگی۔ (۳) یہ معلوم ہونے کے بعد کہ پانچ رکعت پڑھی تو سجدہٴ سہو سے کام نہ چلے گا، بلکہ دوبارہ اس نماز کا اعادہ کرنا ہوگا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند